MeToo#: ممبئی پولیس نے آلوک ناتھ کے خلاف مقدمہ درج کر لیا

0
39

انڈیا میں ممبئی پولیس نے بالآخر بالی وڈ اداکار آلوک ناتھ کے خلاف فلم ساز وِنتا نندا کی ریپ کی شکایت پر ایف آئی آر درج کر لی ہے۔

وِنتا نندا نے رواں سال اکتوبر میں ایک فیس بک پوسٹ میں آلوک ناتھ کے خلاف برسوں پہلے نشہ آور دوا دے کر ان کا ریپ کرنے کا الزام لگایا تھا۔

انڈیا میں ‘می ٹو’ (MeToo#) تحریک کے تحت کئی معروف شخصیات کے نام آئے اور ان میں سے آلوک ناتھ ایک ہیں جن کے خلاف ایف ئی آر درج کی گئی ہے۔

بہرحال آلوک ناتھ نے ان الزامات کو مسترد کیا ہے اور ان پر ہتک عزت کا دعوی بھی کر رکھا ہے۔ اس میں انھوں نے وِنتا نندا سے معافی کا اور ایک روپے کے علامتی ہرجانے کا مطالبہ کیا ہے۔

حال ہی میں دو دوسری اداکاراؤں نے بھی آلوک ناتھ پر جنسی طور پر ہراساں کرنے کا الزام لگایا ہے۔

وِنتا نندا نے سنہ 1990 کی دہائی میں مقبول عام ٹی وی سیریئل ‘تارا’ میں ان کے ساتھ کام کیا تھا۔ یہ سیریئل انھوں نے لکھا تھا۔ انھوں نے اپنے فیس بک پوسٹ میں یہ الزام بھی لگایاتھا کہ آلوک ناتھ نے اس سیریئل کی اہم اداکارہ کو بھی جنسی طور پر ہراساں کیا تھا۔

جب سے یہ الزامات سامنے آئے ہیں آلوک ناتھ نے ان کی سختی سے تردید کی ہے۔ ونتا نندا کے پوسٹ میں پریشان کن تفصیلات ہیں۔

وِنتا نندا نے کہا کہ انھوں نے اس کے بارے میں کھل کر بولنے میں 19 سال لگا دیے۔ اس کے ساتھ ہی انھوں نے ایسے دوسرے افراد سے بھی ‘سامنے آنے کے لیے کہا جو ان کا شکار ہوئے ہیں۔’

پہلے انھوں نے اپنی پوسٹ میں کسی کا نام نہیں لیا تھا لیکن لوگوں نے اندازہ لگایا کہ جس کا وہ ذکر کر رہی ہیں وہ کوئی اور نہیں بلکہ آلوک ناتھ ہیں بعد میں انھوں نے کہا کہ وہ آلوک ناتھ ہی تھے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.